The news is by your side.
Kurtköy Escort

bettilt

istanbul escort
kaçak bahis siteleri canlı casino siteleri
kralbet betturkey 1xbetm.info wiibet.com tipobet deneme bonusu veren siteler mariobet supertotobet bahis.com
براؤزنگ ٹیگ

TTP

سانحہ اے پی ایس: پانچ سوال جن کے جواب ضروری ہیں

سولہ دسمبر ۲۰۱۴ کا دن پاکستان کی تاریخ کا سیاہ ترین دن تھا جس دن ٹی ٹی پی کے چھ مسلح دہشت گردوں نے پشاور کے آرمی پبلک سکول کے احاطہ میں داخل ہوکر ایک سو اڑتالیس افراد کو شہید کردیا جن میں ایک سو بتیس طلبہ تھے جن کی عمریں سولہ سال سے کم…

شہدائے آرمی پبلک اسکول‘ ہم تمہیں نہیں بھولیں گے

آرمی پبلک اسکول پشاور میں ٹی ٹی پی کے درندوں کے ہاتھوں لکھی جانے والی اس ظلم کی داستان کو کوئی بھلا نہیں سکتا، کیونکہ یہ وہ سانحہ تھا جس نے ہر دل کو گھائل کیا اور ہر آنکھ کو اشکبار کیا۔ یہ وہ اندوہناک واقعہ تھا جس کے شہداء کے سوگواران میں…

مخبر‘ کھوجی یا مجاہد؟

کراچی سے تعلق رکھنے والا نوجوان  احمد (فرضی نام )  مجھے بہت عزیز تھا ۔ اس کی حیثیت میرے لئے چھوٹے بھائی جیسی تھی کہنے کو تو وہ شائد ایک مخبر یا کھوجی تھا لیکن میں سمجھتا ہوں وہ  درحقیقت ایک مجاھد تھا جس نے اپنی غلطیوں کی تلافی کرتے ہوئے  بے…

احسان اللہ احسان سپردگی، کس کے مفاد میں؟

پاکستان کی تاریخ کے چند ہولناک دہشت گردی کے واقعات میں نومبر 2010 کا کاؤنٹر ٹیررزم ڈیپارٹمنٹ میں ہونے والا دھماکہ بھی ہے ۔ سول لائنز کراچی میں واقع سی ٹی ڈی کا دفتر جہاں میں بیٹھتا تھا‘ وہاں تحریک طالبان پاکستان اور لشکرجھنگوی نے مشترکہ…

احسان اللہ احسان کا سب سے بڑا جرم کیا ہے

کچھ دن قبل کالعدم تنظیم تحریکِ طالبان پاکستان کے سابق ترجمان احسان اللہ احسان کی ایک ویڈیو سامنے آئی جس میں اس نے اپنے گناہوں کااعتراف کیا اور اپنے ساتھیوں کو ترغیب دی کہ وہ بھی اس لڑائی کو ترک کرکے ہتھیارڈال دیں۔ اس ویڈیو کا جاری ہونا تھا…

پنجاب میں بھی کراچی طرزکا آپریشن ناگزیرہے

پاکستان گزشتہ 10 دس سالوں سے دہشت گردی کی زد میں ہےاوراس بڑھتی ہوئی دہشت گردی کے پیش نظر ہی پاک افواج کی جانب سے گزشتہ سال دہشت گردوں کے خلاف آپریشن ضرب عضب کا آغاز کیا گیا جس میں متعدد دہشت گردوں کو اپنے انجام تک پہنچایا گیا۔ آپریشن ضربِ…

سانحہ پشاور

پشاور کا آرمی پبلک اسکول، جہاں بزدل دہشتگردوں نے اپنی مذموم کارروائی میں سینکڑوں بچوں کو ہمیشہ کی نیند سلا دیا۔ واقعے کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ میرے پاس نا وہ زبان ہے، نا ہی وہ الفاظ جن سے مذمت کر سکوں بس واقعے سے دل خون کے آنسو رو…

instagram volgers kopen volgers kopen buy windows 10 pro buy windows 11 pro