The news is by your side.
betsat
anadolu yakası escort bostancı escort bostancı escort bayan kadıköy escort bayan kartal escort ataşehir escort bayan ümraniye escort bayan
kralbet betturkey 1xbetm.info wiibet.com tipobet deneme bonusu veren siteler mariobet supertotobet bahis.com
maslak escort
istanbul escort şişli escort antalya escort
etimesgut escort eryaman escort sincan escort etlik escort keçiören escort kızılay escort çankaya escort rus escort demetevler escort esat escort cebeci escort yenimahalle escort
aviator oyunu oyna lightning rulet siteleri slot siteleri
ankara escort escort ankara escort
escort istanbul

نیشنل ٹی 20 کپ، قومی ٹیم ’ورلڈ کپ‘ سمجھ کر کھیلے!!

ماضی میں قومی ٹیم کے خلاف سازش ہوئی اور قومی ٹیم نے میگا ایونٹ جیتے، کیا دوبارہ ایسا ہی ہوگا؟

انگلینڈ اور کیوی ٹیم کے دورہ پاکستان منسوخ کرنے کے بعد قومی ٹیم کے لیے نیشنل ٹی 20 کپ کی تیاری ورلڈ کپ ٹی 20 کے لیے سنہری موقع ہے جس میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرکے قومی ٹیم ورلڈ کپ میں شاندار کارکردگی دکھاتے ہوئے کسی بھی ٹیم کو شکست دے کر ورلڈ ٹی 20 کپ جیت کر غیرملکی ٹیموں کو واضح پیغام دے سکتی ہے۔

پاک، نیوزی لینڈ معاملہ کرکٹ

پی سی بی کی انتھک محنت اور کوششوں کے بعد ملک میں انٹرنیشنل کرکٹ بحال ہوئی لیکن کیوی ٹیم کی ایک حرکت نے اس پر پانی پھیر دیا اور بعدازاں پتا چلا کہ یہ بھارتی سازش تھی، جعلی ای میل کے ذریعے مارٹن گپٹل کی اہلیہ کو دھمکیاں دی گئیں، اب یوں لگنے لگا ہے جیسے پاکستان کرکٹ 2009 والی صورت حال پر واپس چلی گئی ہے۔

لیکن ورلڈ کپ میں پاکستان کی ٹیم 24 اکتوبر کو بھارت اور 26 اکتوبر کو دورہ منسوخ کرکے جانے والی کیوی ٹیم کو کرار جواب اپنی کارکردگی سے ہی دے سکتی ہے اور شائقین کرکٹ کے چہرے پر مسکراہٹیں لوٹا سکتی ہے۔
اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ ہماری ٹیم نوجوان کھلاڑیوں پر مشتمل ہے اس میں اگر دو سینئر کھلاڑیوں کی شمولیت ہوجاتی تو ٹیم مضبوط ہوجاتی لیکن اب وقت ان باتوں کا نہیں ہے اب وقت انہی کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی کا ہے تاکہ یہی کھلاڑی میدان میں اتر کر شیروں کی طرح لڑتے نظر آئیں۔

قومی ٹیم کے اسکواڈ پر تنقید کی بجائے اب انہیں سپورٹ کرنا ہوگا، کھلاڑی کی حوصلہ افزائی ہوگی تو وہ میدان میں فائٹ کرتے دکھائی دیں گے اور نتیجہ بھی انشا اللہ اچھا آئے گا۔

ماضی پر نظر دوڑائی جائے تو قومی ٹیم ہر اس وقت ابھر کر سامنے آئی ہے جب قومی ٹیم پر برا وقت آیا ہو، سری لنکن ٹیم پر حملے کے کچھ عرصے بعد ہی قومی ٹیم نے 2009 ٹی ٹوینٹی کا ورلڈ کپ جیتا اور 2010 میں اسپاٹ فکسنگ کیس سامنے آنے کے بعد قومی ٹیم ٹیسٹ میں نمبر ون ٹیم بن کر سامنے آئی۔

گزشتہ دنوں وزیراعظم عمران خان سے ورلڈ کپ اسکواڈ کی ملاقات ہوئی، وزیراعظم نے بھی کھلاڑیوں کو مفید مشورے دیے اور جارحانہ کھیل کھیلنے کا مشورہ دیا، ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ سر پر آن پہنچا ہے، امید یہی ہے کہ قومی ٹیم میگا ایونٹ میں لڑتی دکھائی دے گی اور کھلاڑی ملک کا نام روشن کریں گے۔

Print Friendly, PDF & Email