مردم شماری ملکی ترقی کے لئے ناگزیر

کسی بھی ملک کی ترقی کے لئے افرادی قوت کی اہمیت سے انکار ممکن نہیں ۔ ملک کے مضبوط دفاع و سالمیت کے لئے اعلیٰ ذہانت کی ضرورت ہے اور ظاہر ہے کہ اس کے لئے خاص تناسب سے افراد کا ہونا ناگزیر ہے۔تاہم اگر آبادی حد سے زیادہ بڑھ جائے تو بھی ملکی وسائل پر دباؤ بڑھتا ہے جس سے ترقی کی رفتار سست ہو جاتی ہے ۔ مردم شماری کسی بھی ملک کے لئے بے حد ضروری ہے ۔

مردم شماری کی اہمیت

کسی بھی ملک کے لئے مردم شماری کی اہمیت مسلم ہے جس کی مدد سے سروے کر کے نہ صرف ملکی آبادی کا جائزہ لیا جاتا ہے بلکہ آبادی کے تناسب سے وسائل بھی دیکھے جاتے ہیں ، عوام کی فلاح و بہبود کے لئے مختلف پالیسیاں وضع کی جاتی ہیں ۔یہ بھی دیکھا جاتا ہے کہ ملک  کی اکثریتی آبادی کی زبان کون سی ہے ، تعلیم یافتہ اور ناخواندہ افراد کتنے ہیں ؟ شادی شدہ ، حاملہ ، بچے ، اور غیر شادی شدہ کا کیا ریشو ہے ؟ملکی وسائل تو جتنے ہیں سو ہیں ہم نے اپنی آبادی کو کنٹرول کرنا ہے اور اسکو وسائل کے مطابق سیٹ کرنا ہے جس کے لئے مردم شماری ضروری ہے ۔

مردم شماری کے حوالے سے زمبابوے کی مثال

یہاں ہم زمبابوے کی مثال لیتے ہیں کہ اس ملک کی آزادی کے بعد سے اب تک یہاں ہر دس سال کے بعد مردم شماری کی جاتی رہی ہے ۔ ۱۹۸۲ میں اسکی کل آبادی ۷۔۶ ملین افراد تھی ، ۱۹۹۲ میں ۴۔۱۰ اور ۲۰۰۲ میں آبادی بڑھ کر ۶۔۱۱ ملین تک پہنچ گئی ۔

پاکستان میں مردم شماری

پاکستان میں اب تک پانچ مرتبہ مردم شماری ہو چکی ہے ۱۹۹۸ کی مردم شماری کے مطابق ملک کی کل آبادی ۱۳ کروڑ چونسٹھ لاکھ افراد پر مشتمل تھی ۔ ۱۹۹۸ کے بعد اب تک مردم شماری نہیں ہوئی اور اسے سیاست کی نذر کیا جا رہا ہے تاہم حالیہ اقتصادی سروے کے مطابق پاکستان کی کل آبادی ۱۸ کروڑ ۸۰ لاکھ کے لگ بھگ ہے ۔

پاکستان میں مردم شماری کے بارے میں حالیہ فیصلے

پاکستان میں نواز حکومت نے ۱۸ سال کے بعد فوج کی زیر نگرانی مردم شماری کروانے کا عندیہ دیا تھا ۔ لیکن اب مشترکہ مفادات کی کونسل کے اجلاس میں اسے موخر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کی وجہ ملک میں امن و اماں کی خراب صورتحال بتائی گئی ہے ، ن لیگ کی اہم رہنما اور وزیر مملکت برائے اطلاعات و نشریات مریم اورنگ زیب نے بی بی سی کو بتایا ہے کہ ۲۰۱۶ کی مردم شماری کے لئے ایک لاکھ فوجیوں کی ضرورت تھی ۔ مشترکہ مفادات کی کونسل کے حالیہ اجلاس میں التوا کا فیصلہ اس لئے بھی کیا گیا ہے کیونکہ ابھی تک اس پر تمام اسٹیک ہولڈرز متفق نہیں ہیں ۔

ماضی میں مردم شماری کے حوالے سے تحفظات

انیس سو اٹھانوے میں جب مردم شماری ہوئی تھی تو پشتون قوم پرست جماعت پختونخواہ ملی عوامی پارٹی نے اس کا بایئکاٹ کیا تھا ۔ اس پر اعتراضات یہ تھے کہ پہلے پشتون اوربلوچ  آبادی مساوی تھی جب ۱۹۷۱ میں حکومت بنی تو بلوچ اکابرین تعداد میں زیادہ تھے ۔جنہوں نے پشتون آبادی ۵۰ سے ۳۰ فیصد کر دی اور بلوچوں کی آبادی ۵۰ سے بڑھا کر ۷۰ فیصد تک کر دی ۔

آئین میں مردم شماری کے حوالے سے اہم شقیں

آئین پاکستان کے دو آرٹیکل مردم شماری سے متعلق ہیں ۔ آرٹیکل ۵(۵۱) کے مطابق مردم شماری کا بنیادی مقصد قومی اور صوبائی اسمبلیوں میں نشستوں کا تعین ہوتا ہے جبکہ آرٹیکل ۲(۱۶۰) کے مطابق مردم شماری کی بنیاد پر قومی مالیاتی ایوارڈ یعنی این ایف سی کا تعین کیا جاتا ہے اور اسکی تقسیم ملک کے چاروں صوبوں اور فاٹا میں ہوتی ہے ۔مردم شماری ملک میں سترہ گریڈ اور اس سے اوپر کے گریڈ کے سرکاری ملازمین کی بھرتی سے متعلق کوٹے کے لئے بھی ضروری ہوتی ہے ۔

مردم شماری کے حوالے سے مختلف جماعتوں کے تحفظات

مردم شماری ایک اہم قومی فریضہ ہے لیکن پاکستان میں حالیہ دنوں میں اس بارے میں کوئی اتفاق رائے پیدا نہیں ہو رہا اب سوال یہ ہے کہ مختلف سیاسی جماعتوں کے اس حوالے سے کیا تحفظات ہیں؟ تو ان تمام جماعتوں کا الگ الگ موقف ہے۔

بلوچ اور پشتون

یہ دونوں قومیں اور ان کی جماعتیں ہی اصل میں زیادہ تر مردم شماری کے حق میں نہیں ہیں اس کی باقاعدہ وجوہات ہیں ۔ پشتونوں نے آج تک ماضی میں ہونے والی  کسی مردم شماری کو بھی تسلیم نہیں کیا اور اب بلوچ قوم بھی اسی طرح کر رہی ہے ۔ جس کی بنیادی وجہ بلوچستان میں لاکھوں افغان مہاجرین کی ایک بڑی تعداد کا موجود ہونا ہے ان افغان مہاجرین نے پاکستانی شہریت بھی حاصل کر رکھی ہے ۔ بلوچ قوم پرست یہ کہتے ہیں کہ اس طرح بلوچوں کی کیا نمائندگی ہے ؟ اور مردم شماری کا فائدہ بھی کیا ہے ؟ان دونوں قوموں کےخدشات درست ہیں کیونکہ افغان مہاجرین اور دیگر افراد جو پاکستان میں آگئے ہیں ان کی اپنے علاقوں میں آباد کاری کے بغیر مردم شماری بے کار ہے ۔

مردم شماری اور پاکستان پیپلز پارٹی

سابق وزیر اعلی سندھ قائم علی شاہ نے کہا تھا کہ مردم شماری کے لئے سندھ حکومت کو اب تک اعتماد میں نہیں لیا گیا ۔مردم شماری کے لئے کمیشن کا سربراہ غیر جانبدار ہوناچاہیے ۔ پیپلز پارٹی دیکھیں تو ایک بڑی جماعت ہے اس کو نظر انداز کرنا درست نہیں ۔

ایم کیو ایم اور مردم شماری

ایم کیو ایم کے دو ر ہنما ایسے ہیں جنہوں نے مردم شماری کو ایک اہم موضوع بنا کر پیش کیا ہے اور اس پر باقاعدہ دلائل سے بات کی ہے ۔ اپوزیشن لیڈر اور ایم کیو ایم کے راہنما خواجہ اظہار الحسن نے مردم شماری میں سیکورٹی اداروں کو شامل کرنے پر زور دیا ہے ۔
متحدہ قومی موومنٹ رابطہ کمیٹی کی ڈپٹی کنونئیر اور سینٹ میں انسانی حقوق کمیٹی کی چئیر پرسن محترمہ نسرین جلیل نے بھی کم و بیش انہی خیالات کا اظہار کیا ہے ۔ انھوں نے کہا ہے کہ اس ادارے کو آزاد اور خود مختار ادارے کا درجہ دیا جائے اور کسی حاضر سروس افسر کو چیف سنسر آفیسر لگایا جائے۔ یہ ادارہ ۱۹۵۱ سے ایک خود مختار ادارے کے طور پر کام کر رہا ہے ۔لیکن اس آزاد محکمے کے وفاقی شماریاتی اور ایگریکلچر شماریاتی اداروں میں ادغام سے اسکی کارکردگی اور شفافیت متاثر ہو گی ۔

حاصل بحث

کسی بھی نتیجے پر پہنچنے سے قبل یہ دیکھنا بھی ضروری ہے کہ تمام اسٹیک ہو لڈرز کا اعتماد حاصل کیا جائے ۔ ایاز لطیف پلیجو کا یہ کہنا ہے کہ سندھ حکومت کو پہلے یہاں کی مردم شماری کروانا چاہیے تاکہ سندھ کی آبادی کو کم کر کے دکھایا نہ جا سکے ۔ مولا بخش چانڈیو کہتے ہیں کہ مردم شماری سندھ کے لئے زندگی اورموت کا مسئلہ ہے اور اس سے فرار آئین سے فرار ہے ۔ قابل غور یہی ہے کہ ملک میں مردم شماری ہر دس سال کے  بعد ہونی چاہیے تاکہ وسائل کا بہتر استعمال ہو سکے، افرادی قوت کو تعمیری کاموں میں لگایا جاسکے اور ساتھ ہی ساتھ اس اہم قومی ایشو پر اتفاق رائے پیدا کیا جائے جو سب سے اہم ہے ۔

راضیہ سید: راضیہ سید پنجاب یونیورسٹی سے سیاسیات میں ماسٹرز کی ڈگری کی حامل ہیں اور ایک دہائی سے زائدعرصے سے شعبہ صحافت سے بطور رپورٹر ، پروڈیوسر اور محقق وابستہ ہیں ، مختلف اخبارات اور ٹی وی چینلز کے لئے کالم اور بلاگز تحریر کرتی ہیں۔

View Comments (11)

  • The hypocrisy of the ppp knows no bounds. They keep on harking about bhutto yet the bhutto's clan are no where to be seen. Zardaris party was in power yet all they did was rob the nation. They attack imran khan because the ppp see him and pti as a political threat. This party of zardari has only empty slogans, and trying to create fear and division on provincial lines. Bhutto himself wasnot a leader of great calibre. Where has zardari got his wealth from? His son is a drama like his mother.

  • PPP is getting scared of the change in the country. They know people are getting more informed and will stand up against corruption and dynastic politics. Go zaradari and zardari jr. go. Go nawaz go.

  • Yeah, Imran is stupid that's why you tried to copy everything from his dharna, songs, Ppp coloured caps and shawls. But still fail, just see them all dead bodies. Both Nawaz and Zardari have looted and destroyed this country.

    GO NAWAZ GO!!!
    GO ZARDARI GO!!!

  • Rest of the country has only one phrase on their tongue and that is GOOO NAWAZ GOOOO!!! GOOO ZARDARI GOOO!!!! ENOUGH OF BHUTTOS, SHARIFS AND ZARDARIS.

  • I do hope that people of Pakistan will wake up, take a stock of what has PPP delivered for them as a nation, country's poor standing at world stage rightly should be attributed to PPP and PML-N. It doesn't affect us living outside the country but it does make us sad when Pakistan is referred to as a sick man of the world, nothing to offer but a liability. However in contrast many individuals living across the world with right opportunity have proved time & again what a talented nation we really are! Imran believes in you, will want you to get the respect you deserve(every one associated with Pakistan). Even Allah would not change your fate unless and until you struggle for it and support those who are making these efforts on your behalf.